دوٹوک انکار،افغان مسئلے کاحل،پاکستان اب کیاکرے گا،پاک فوج نے سرپرائز دیدیا،امریکی ششدر


راولپنڈی(این این آئی)آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ ہم امریکہ سے کسی قسم کی امداد نہیں چاہتے ہماری کوششوں پر اعتماد کرتے ہوئے انکا ادراک اور اعتراف کیا جائے ، کسی کو خوش کرنے کی بجائے اپنے قومی مفاد اور قومی پالیسی کے مطابق افغان مسئلے کے حل کیلئے بھر پور کوششیں جاری رکھیں گے ۔آئی ایس پی آر کے مطابق چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ سے امریکی سفیر ڈیوڈ ہیل نےبدھ کو جی ایچ کیو میں ملاقات کی اور نئی امریکی پالیسی کے بارے میں بریفنگ دی۔  امریکی سفیر نے کہا کہ
 

انکا ملک دہشتگردی کیخلاف جنگ میں پاکستان کے کردار کو اہمیت دیتا ہے اوروہ افغان مسئلے کے حل کیلئے پاکستان کے تعاون کا خواہاں ہے۔ پاک فوج کے سربراہ نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کیلئے افغانستان میں امن اتنا ہی اہم ہے جتنا کسی اور ملک کیلئے اہم ہے۔انہوں نے کہاکہ ہم نے افغان مسئلے کے حل کیلئے بہت کچھ کیا ہے اور اس حوالے سے کسی کو خوش کرنے کیلئے نہیں بلکہ اپنے قومی مفاد اور قومی پالیسی کے مطابق بھر پور کوششیں جاری رکھیں گے۔ جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ ہم امریکہ سے کسی مادی یا مالی معاونت کے خواہشمند نہیں ہیں بلکہ ہم چاہتے ہیں کہ ہماری کوششوں پر اعتماد کرتے ہوئے انکا ادراک اور اعتراف کیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ کسی کو خوش کرنے کی بجائے اپنے قومی مفاد اور قومی پالیسی کے مطابق افغان مسئلے کے حل کیلئے بھر پور کوششیں جاری رکھیں گے افغانستان میں طویل عرصے سے جاری جنگ کو منطقی انجام تک پہنچانے کیلئے سٹیک ہولڈرز کے مابین اشتراک کار اور مربوط کوششیں ضروری ہیں ۔ ‎

Advertisement



loading...
loading...

ڈیلی نیوز پاکستان

ایک ایسی ویب سائٹ جہاں آپکو ہر اھم خبر بروقت ملے خبر سیاست سے متعلق ہو یا معیشت سے ملکی ہو یا غیر ملکی یا بین الاقوامی معیشت کے عنوان سے ہو یا معاشرت کے کھیل کی خبریں ہوں یا عوامی مسائل کی الجھنیں ہم آپکے سامنے پیش کرتے ہیں ہر ضروری اور غیر معمولی نیوز اپڈیٹس تجزیے تبصرے مکالمے مباحثے بلاگز مضامین مقالات بروقت برموقع برمحل
Top