بھارت میں نومسلم خاتون کا بدھ انتہا پسندوں کو کرارا جواب

بھارت میں نومسلم خاتون کا بدھ انتہا پسندوں کو کرارا جواب
نومسلم خاتون کہتی ہیں کہ انہوں نے اپنی روحانی جستجو کے نتیجے میں اسلام قبول کیا ہے، بدھ اِزم سے نفرت کی بناء پر نہیں۔ (فوٹو: فائل)

لداخ کی ایک نومسلم خاتون نے انتہاء پسندوں کی جانب سے گھناؤنے پروپیگنڈے کا جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ انہوں نے اپنی خوشی سے اسلام قبول کیا ہے اور ان سے دوبارہ بدھ مت اختیار کرنے کا مطالبہ انتہائی ’’شرمناک‘‘ ہے۔

 

ماضی میں اسٹانزن سالڈون کے نام سے بدھ مت کی پیروکار خاتون نے 2015 میں اسلام قبول کیا اور انہیں ’’شفا‘‘ کا نام دیا گیا۔ گزشتہ سال انہوں نے سید مرتضی آغا نامی ایک مسلمان انجینئر سے شادی کرلی لیکن قبولِ اسلام سے لے کر اب تک شفا کو لداخ میں بدھ مت کے ماننے والوں کی جانب سے شدید تنقید کا سامنا ہے جبکہ ان کے قبولِ اسلام کو بدھ مت سے نفرت کا نتیجہ قرار دیا جارہا ہے۔

اپنی ذات پر اٹھائے جانے والے تمام اعتراضات کا جواب دیتے ہوئے ’’شفا‘‘ نے بھارتی اخبار ہندوستان ٹائمز میں ایک مضمون لکھا ہے جس میں ان کا مؤقف ہے کہ انہوں نے اپنی ’’روحانی جستجو‘‘ کے نتیجے میں اسلام قبول کیا ہے نہ کہ بدھ اِزم سے نفرت کی بناء پر۔

Advertisement



loading...
loading...

ڈیلی نیوز پاکستان

ایک ایسی ویب سائٹ جہاں آپکو ہر اھم خبر بروقت ملے خبر سیاست سے متعلق ہو یا معیشت سے ملکی ہو یا غیر ملکی یا بین الاقوامی معیشت کے عنوان سے ہو یا معاشرت کے کھیل کی خبریں ہوں یا عوامی مسائل کی الجھنیں ہم آپکے سامنے پیش کرتے ہیں ہر ضروری اور غیر معمولی نیوز اپڈیٹس تجزیے تبصرے مکالمے مباحثے بلاگز مضامین مقالات بروقت برموقع برمحل
Top